...

لیکن جون ایلیا پک فری ڈاونلوڈ Lekin by Jaun Elia

لیکن جون ایلیا پک فری ڈاونلوڈ
لیکن جون ایلیا پک فری ڈاونلوڈ
مرتب: خالد احمد انصاری
شاعر کا نام:جون ایلیا
کتاب کا نام :ليكن ( مجموعه کلام)
زبان:اردو
ناشر:انیس امروہوی
تعداد: ۲۰۰
قیمت:۱۵۰
256:صفحات
کمپوزنگ:رچنا کار پروڈکشنز لکشمی نگر، دہلی ۱۱۰۰۹۲
سر ورق:مسعود التمش
معاون:پی ڈی ایف بک ڈاٹ ان لائن

عہد رفاقت ٹھیک ہے لیکن، مجھ کو ایسا لگتا ہے
تم تو میرے ساتھ رہو گی، میں تنہا رہ جاؤں گا
جون ایلیا
انتساب
جون ایلیا کے فرزند زریون ایلیا کے نام
ذرا ٹھہرو
میں یہاں ایک اہم بات کی طرف اشارہ کرنے کی جسارت کر رہا ہوں، جیسا کہ یہ بات سب جانتے ہیں کہ جون ایلیا ایک انتہائی زود گو اور پُر گو شاعر تھے اور اُن کا کلام جا بہ جا نکھرا ہوا ہے۔ میں اب تک وہ واحد شخص ہوں جو کہ شروع دن سے یہ کہتا رہا ہے کہ اس کے پاس جون ایلیا کا سپرد کردہ خاصہ کلام موجود ہے، جسے میں جون ایلیا کے اہل خانہ کی اجازت اور تعاون سے مجموعوں کی صورت میں شائع کر رہا ہوں تا کہ اس سونپی ہوئی ذمہ داری سے عہدہ برآ ہو سکوں ، لیکن چند احباب جو کہ جون ایلیا سے اپنے تعلقات و روابط کا ذکر اور محبت کا دم بھرتے نہیں تھکتے ، ان کے کلام کو مختلف ادبی رسائل میں شائع کروا کے نہ جانے جون ایلیا کی کون سی خدمت کر رہے ہیں۔ میری ان احباب سے گزارش ہے کہ ان کے اس اقدام سے جون ایلیا کے آنے والے مجموعوں کی ادبی فضا متاثر ہو رہی ہے، اگر اُن کا مقصد کلام شائع کروانا ہی ہے تو ان کے آنے والے مجموعوں میں شائع کرائیں۔ میں یہ یقین دلاتا ہوں کہ اس فراہم کردہ کلام کو میں اُن حضرات کے نام اور شکریہ کے ساتھ شائع کروں گا ، اس طرح جون ایلیا کا کلام مزید بکھر نے سے بچ جائے گا۔
جون ایلیا اور ان کے بھتیجے علامہ علی کرار نقوی صاحب کی محبت کا رشتہ کسی تعارف کا محتاج نہیں ہے۔ اپنے بے شمار چاہنے والوں کے ہوتے ہوئے جون ایلیا نے ان کے گھر قیام کو ترجیح دی ، اس کی وجہ بھی عیاں تھی ، علامہ علی کرار نقوی صاحب ان کا جس طرح خیال رکھتے تھے اور ان کے انتہائی مشکل مزاج کو سمجھتے تھے، یہ کسی اور شخص کے بس کی بات نہیں تھی۔ ان کا جون ایلیا سے محبت اور علم دوستی کا رشتہ ہنوز قائم و دائم ہے۔ انہوں نے ان کے کلام کا کافی حصہ اپنے پاس محفوظ رکھا ہوا ہے اور ان کی خواہش ہے کہ اگلے آنے والے مجموعہ میں اس کو بھی مرتب کر لیا جائے ۔ یہ ان کی جون ایلیا سے محبت کا دیرینہ ثبوت ہے۔ کاش، دوسرے احباب بھی علامہ علی کرار نقوی صاحب کے اس قابل تحسین اقدام کی پیروی کریں۔
میری کوشش ہے کہ جون ایلیا کے کلام کی کوئی بھی چیز جو کہ اشاعت کے قابل ہو، ان کے مجموعوں میں شائع ہو کر محفوظ ہو جائے ۔ اس سلسلے میں مجھے جو تک و دو کرنا پڑی اور مختلف کتب خانوں کی خاک چھاننا پڑی، یہاں میں اس کی تفصیل غیر مناسب سمجھتا ہوں، لیکن نسیم احمد ، محمد نعمان (غالب لائبریری)، محمد زبیر، امان اللہ ( بیدل لائبریری) اور دُبئی میں مقیم جون ایلیا کے نیازمند ارشد حسین (نظم زمستان مہیا کی ) کو اپنے شکریے کا مستحق سمجھتا ہوں، جنہوں نے مختلف ادبی رسائل سے اہم مواد کی فراہمی میں بے حد تعاون کیا۔
آن لائن پڑھیے

محترم جناب قمر رضی کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں، جنہوں نے میری کوششوں کو سراہا اور حوصلہ افزائی کی۔ محترم جناب ممتاز سعید ( شمن بھائی) کا خصوصی شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے اس کلام کو دیکھا اور قیمتی مشوروں سے نوازا۔ محترم جناب پروفیسر ساجد کرن، آغا وسیم، محترم عمر زمان اور زریون ایلیا کا بھی شکریہ ادا طہیر نفسی ، سیا ، سید سلیم کا بھی شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں، جنہوں نے اس مجموعہ کی تکمیل کے تمام مراحل میں حسب روایت بھر پور ساتھ دیا۔ محترم حسن عابد کا خصوصی شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے مجموعہ کے پہلے ایڈیشن میں غلطیوں کی نشاندہی کی۔

اوپر دیے گئے لنک سے آپ اس کتاب کو ڈاؤن لوڈ کر کے تمام مضامین کو بآسانی پڑھ سکتے ہیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top
Seraphinite AcceleratorOptimized by Seraphinite Accelerator
Turns on site high speed to be attractive for people and search engines.