...
کلام احمد فراز
کلام احمد فراز
تعداد: 500
شاعر کا نام: احمد فراز
کتاب کا نام :کلام احمد فراز
زبان:اردو
ترتیب:فاروق ارگلی
اشاعت : ۲۰۰۵
قیمت:تین سو روپے -/300
صفحات:1064
معاون:پی ڈی ایف بک ڈاٹ ان لائن

کلام احمد فراز
۱۳ مکمل مجموعے
جان جاناں
خواب گل پریشاں ہے
غزل بہانہ کروں
درد آشوب
تنہا تنہا
نایافت
نابینا شہر میں آئینہ
بے آواز گلی کوچوں میں
پس انداز موسم
شب خون
بود لک
یہ سب میری آوازیں ہیں
میرے خواب ریزہ ریزہ
آن لائن پڑھیے

عرض مرتب
اردو شاعری ولی ، میر، غالب، اقبال، جوش ، جگر ، فراق اور فیض کے ادوار سے ارتقائی مراحل طے کرتی ہوئی عہد نو میں احمد فراز تک پہنچی تو قبول عام کی تمام سرحدوں کو پار کر گئی ۔ احمد فراز کی کثیر الجہات اور ہمہ رنگ شاعری بلاشبہ اردو کے شعری ادب کا نقطۂ عروج ہے اور اس عہد کا مکمل منظر نامہ بھی ۔ احمد فراز اس لحاظ سے بھی اردو کے ایسے خوش نصیب شاعر ہیں جنہیں دنیا بھر میں منعقد ہونے والے شعری اجتماعات میں سب سے زیادہ مقبولیت حاصل ہے۔
اس حقیقت سے تو یقیناً فراز کے مخالفین بھی انکار نہیں کر سکتے کہ فی زمانہ فراز عالمی شہرت اور مقبولیت کے جس مقام پر فائز ہیں وہاں دور دور تک ان کا کوئی ثانی نظر نہیں آتا ۔ فراز پاکستان کے شہری ہیں لیکن ان کی شاعری کی لازوال خوشبوزمان و مکان کی تمام حدود کو عبور کرتے ہوئے ساری دنیا میں پھیل چکی ہے۔
مجھے بجا طور پر ناز ہے کہ مجاہد اردو علی صدیقی مرحوم کی قیادت میں عالمی اردو کانفرنس کے تاریخ ساز بین الاقوامی مشاعروں کے انتظام و اہتمام کے دوران بارہا اس عظیم المرتب شاعر کی خدمت اور میزبانی کے مواقع حاصل ہوئے ۔ شہر میر و غالب دہلی میں اپنے نصف صدی کے صحافتی اوادبی سفر میں ، میں نے اپنے عہد کی بہت سی رفیع الشان علمی وادبی ہستیوں کو قریب سے دیکھا ہے لیکن احمد فراز صاحب کی خوش خلقی ، متانت ، صاف گوئی ، بے باکی اور کھرے پن نے مجھے سب سے زیادہ متاثر کیا۔ میرا ایقان ہے کہ فراز ، بہت بڑے شاعر ہونے کے ساتھ ساتھ بہت بڑے انسان بھی ہیں۔
زیر نظر کتاب فراز صاحب کے کئی شعری مجموعوں کا مرقع ہے جو بطور خاص ہندوستان کے ان پرستاران فراز کے لئے ترتیب دیا گیا ہے جو اپنے محبوب شاعر کی تخلیقی وسعتوں تک رسائی کی آرزو رکھتے ہیں لیکن مختلف ٹکڑوں میں بکھرے ہونے تخلیق کار کی عظمت کے شایان شان ہندوستان میں معیاری اشاعت کے فقدان اور ملک کے دور دراز علاقوں تک کلام فراز کی عدم دستیابی کی وجہ سے مایوسی کا شکار تھے۔ یہ مجموعہ جناب احمد فراز کی شعری و فکری کا ئنات کی بھر پور سیاحت کرنے کے خواہش مند ہندوستانی طلباء محققین و دانشورں کے ساتھ ساتھ شائقین شعر و ادب کے لئے بھی ایک بیش بہا تحفہ ہے جو قطعی غیر تجارتی و غیر منفعتی بنیادوں پر پیش کیا جا رہا ہے اور جس کا واحد مقصد اچھی شاعری کے وسیلے سے اردو زبان و تہذیب کی بقاء و ترویج کے اس عظیم کا ز کو آگے بڑھاتا ہے جسے خود جناب احمد فراز اپنا نصب العین اور مشن تصور کرتے ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ اس پر خلوص رضا کارانہ کوشش کو قدر کی نگاہ سے دیکھا جائے گا۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top
Seraphinite AcceleratorOptimized by Seraphinite Accelerator
Turns on site high speed to be attractive for people and search engines.