...
احمد فراز کی شاعری کا تنقیدی جائزہ
احمد فراز کی شاعری کا تنقیدی جائزہ
کلمی نام: ڈاکٹر افتاب عرشی
مصنف کا نام: ڈاکٹر افتاب احمد
کتاب کا نام :احمد فراز کی شاعری کا تنقیدی جائزہ
۲۰۲۲:سن اشاعت
صفحات:۲۰۰
تعداد:۱۰۰۰
کمپوزنگ: مولانا عبدالرافع خلیلی ندوی
معاون:پی ڈی ایف بک ڈاٹ ان لائن

کتاب کا مختصر تعارف
اس کتاب میں ڈاکٹر افتاب احمد نے 12 ابواب کے ساتھ عنوان باندھے ہیں جس میں پہلا باب حرف آغاز اور دوسرا باب افتاب روشن اور تیسرا باپ پیش گفتار باندھا ہے اسی طرح انہوں نے 12 باب باندھے ہیں جس میں انہوں نے احمد فراز کی شاعری کا تنقیدی جائزہ بخوبی سے کیا آپ اس کتاب کو ہماری ویب سائٹ پی ڈی ایف بک ڈاٹ ان لائن سے ڈاؤن لوڈ کر کے فائدہ اٹھا سکتے ہیں اور ان لائن بھی پڑھ سکتے ہیں
آنلائن پڑھیے
نہ جانے کتنے دلوں کے وہ گاؤ سہتے تھے
مزاج میں وہ ہمیشہ ہی نرم رہتے تھے
سخن وروں میں یہ چرچا رہا بہت دن تک
غزل وہی ہے جو احمد فراز کہتے تھے
احمد فراز کا تعارف
سید احمد شاہ جو اپنے قلمی نام احمد فراز سے مشہور ہیں، ایک پاکستانی اردو شاعر، اسکرپٹ رائٹر اور پاکستان اکیڈمی آف لیٹرز کے بانی ڈائریکٹر جنرل (بعد میں چیئرمین) بنے۔ انہوں نے فراز کے نام سے اپنی شاعری لکھی انہوں نے ملک میں فوجی حکمرانی اور بغاوت پر تنقید کی اور فوجی آمروں کے ہاتھوں بے گھر ہو گئے۔
پیدائش
احمد فراز 12 جنوری 1931کو پیدا ہوئے
وفات
2008,25 اگست
ایوارڈز اور پہچان
احمد فراز کو پہلے حکومت پاکستان نے ستارہ امتیاز اور پھر 2004 میں اس وقت کے صدر پاکستان پرویز مشرف نے ہلال امتیاز سے نوازا۔ انہوں نے یہ ایوارڈ دو سال بعد 2006 میں “مشرف حکومت کے اقدامات کے خلاف احتجاج کے طور پر واپس کیا۔
فراز کی شاعری کاآغاز
فراز نے شاعری اس وقت شروع کی جب وہ ابھی کالج کے نوجوان طالب علم تھے۔ وہ ایک غزل گو شاعر کے طور پر ابھر کر سامنے آئے جس کی اپنی ایک انفرادی دستخط تھی۔ یہاں تک کہ جب انہوں نے محبت اور رومان کے روایتی موضوعات کی طرف متوجہ کیا تو اس نے اپنی شاعری میں تمام تر مایوسیوں اور مایوسیوں کے ساتھ اپنی عمر بھی لکھی اور مزاحمتی شاعری کے چند بہترین نمونے بھی پیش کیے۔ وہ ایک باکمال شاعر تھے جن کے کریڈٹ پر کئی انتھالوجی ہیں۔ ان میں تنھا تنھا، دردِ آشوب، جانان جانان، شبخون، میری خواب رضا، بیاورہ گلی کوچوں میں، نبیہ شر میں آینہ، پس انداز موسم، اور خواب گل پرشان ہے شامل ہیں۔ ان کی شاعری کے تراجم سب آوازیں میری ہیں میں شامل ہیں۔ انہوں نے ای عشق جنون پیشا میں کنور مہندر سنگھ بیدی کی شاعری سے ایک انتخاب بھی پیش کیا۔ ان کی کلیات شہر سخن آراستہ ہے کے ایک جامع عنوان کے ساتھ شائع ہوئی۔
ابتدائی زندگی
فراز 12 جنوری 1931 کو کوہاٹ میں سید احمد شاہ کے نام سے پیدا ہوئے، سید محمد شاہ بارک کے بیٹے تھے۔ ان کے بھائی مسعود کوثر ہیں، جو پاکستان کے خیبر پختونخواہ کے سابق گورنر ہیں۔ فراز اس سے قبل اپنے خاندان کے ساتھ ضلع کوہاٹ سے پشاور منتقل ہوئے تھے۔ انہوں نے ایڈورڈز کالج پشاور سے تعلیم حاصل کی اور پشاور یونیورسٹی سے اردو اور فارسی میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کی۔ کالج کی زندگی کے دوران ہی دو شاعروں فیض احمد فیض اور علی سردار جعفری نے انہیں متاثر کیا اور فراز کے رول ماڈل بن گئے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top
Seraphinite AcceleratorOptimized by Seraphinite Accelerator
Turns on site high speed to be attractive for people and search engines.